منگل ۲۰ اپریل۲۰۲۱

پھیپھڑوں کے سرطان کا عالمی دن

جمعرات, ۰۱   اگست ۲۰۱۹ | ۰۲:۴۶ شام

مریم عبید:دنیا بھر میں آج پھیپھڑوں کے سرطان کا عالمی دن منایا جا رہا ہے

پھیپھڑوں کے سرطان سے آگاہی کے لیے دنیا بھر میں ہر سال 1اگست کو پھیپھڑوں  کے سرطان کا عالمی دن منایا جاتا ہے ۔ پھیپھڑوں کا سرطان ایک نہایت مہلک بیماری ہے ۔دنیا بھر میں کینسر سے ہونے والی ہر پانچ میں سے ایک موت پھیپھڑوں کے سرطان کی وجہ سے ہوتی ہے ۔ہماری چھاتی کے اندر دو پھیپھڑے موجود ہوتے ہیں، جو سانس لینے میں ہماری مدد کرتے ہیں تاہم  جب ہم سانس اندر کھینچتے ہیں، تو آکسیجن ناک یا منہ سے ہوا کی نالی  کے ذریعے ہمارے اندر جاتی ہے۔ یہ دو نالیوں (جنہیں دایاں برونکس اور بایاں برونکس کہا جاتا ہے) میں تقسیم ہوکر پھیپھڑوں میں جاتی ہے۔ پھر یہ مزید چھوٹی نالیوں (برونکیولز) میں تقسیم ہو جاتی ہے۔ برونکیولز کے آخری سروں پرلاکھوں کی تعداد میں چھوٹی چھوٹی ہوا کی تھیلیاں موجود ہوتی ہیں، جنھیں ’الویوالئی‘ کہا جاتا ہے۔ یہ وہ جگہ ہوتی ہے، جہاں سے آکسیجن خون میں جاتی ہے۔ جسم کے تمام حصے چھوٹے خلیوں سے مل کر بنتے ہیں۔ پھیپھڑوں کا سرطان اس وقت ہوتا ہے، جب ان میں موجود خلیے بےقابو انداز میں بڑھنا شروع ہو جاتے ہیں اور ایک ڈھیر بنا لیتے ہیں، جسے گلٹی کہا جاتا ہے۔ پھیپھڑوں کے زیادہ تر کینسر سگریٹ نوشی کی وجہ سے لاحق ہوتے ہیں۔ لیکن پھیپھڑوں کے کینسر میں مبتلا ہونے والے 10میں سے 1شخص یعنی10فیصد نے کبھی سگریٹ نوشی نہیں کی ہوتی۔  پھیپھڑوں کے کینسر کی علامات میں  ایسی کھانسی جو تین ہفتے یا زیادہ عرصے تک رہے، چھاتی کا انفیکشن جو ٹھیک نہ ہورہا ہو، سانس اکھڑنے میں اضافہ اور خرخراہٹ، بلغم میں خون آنا، آواز میں کھردرا پن، کھانسی کے دوران ہلکا یا تیز درد، بھوک یا وزن میں کمی آنا، نگلنے میں دشواری، بہت زیادہ تھکاوٹ اور سستی شامل ہیں تاہم پھیپھڑوں کے کینسر کا علاج آپریشن (سرجری)، کینسر کی ادویات (کیموتھراپی یا ہدفی تھراپی) یا ریڈیو تھراپی سے کیا جاسکتا ہے۔

تبصرہ کریں